پاک سرزمین پارٹی میں شمولیت پر پیسوں کا اسکینڈل

pak-sarzameen-party leadersمتحدہ قومی مومنٹ کی سابقہ رکن سندھ اسمبلی بلقیس مختار کے بارے میں انکشاف ہوا ہے کہ انہوں نے مصطفیٰ کمال کی نومولود پاک سرزمین میں شمولیت اختیار کرنے کے لئے مبینہ طور پر دو کروڑ روپے وصول کئے ہیں۔ انتہائی باوثوق ذرائع کے مطابق متحدہ قومی مومنٹ کی دیرینہ خاتون رکن اور سابقہ رکن سندھ اسمبلی بلقیس مختار کو مصطفیٰ کمال کی پارٹی میں شمولیت اختیار کرنے کے لئے ایم کیو ایم کے منحرف رہنما ڈاکٹر صغیر احمد نے قائل کیا۔

Advertisement
Null

ذرائع نے بتایا کہ ڈاکٹر صغیر احمد کی معرفت نارتھ ناظم آباد میں بلقیس مختار کی کزن کے گھر میں گزشتہ ایک ماہ میں چار ملاقاتیں ہوئیں۔ بلقیس مختار نے سندھ اسمبلی کی رکنیت سے مستعفی ہونے اور پاک سرزمین میں شمولیت اختیار کرنے کے لئے مبینہ طور پر پانچ کروڑ روپے کی ڈیمانڈ کی لیکن بالاآخر دو کروڑ روپے لے کر ایم کیو ایم کو خیر آباد کہنے پر حامی بھر لی۔ پچاس لاکھ پریس کانفرنس سے دو دن قبل اور پچاس لاکھ روپے مصطفیٰ کمال کے ہمراہ پریس کانفرنس کے فوری بعد بلقیس مختار کو نقد دے دئے گئے ہیں جبکہ مزید ایک کروڑ روپے دو ہفتوں کے اندر دینے کی یقین دہانی کرائی گئ ہے۔

ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ مصطفیٰ کمال کی جانب سے ڈاکٹر صغیر احمد کو ایم کیو ایم کے مزید دو رکن سندھ اسمبلی توڑ کر لانے کا ٹاسک دیا گیا ہے۔

ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ مصطفیٰ کمال اور انیس قائم خانی ڈیفنس کے جس بنگلے میں رہائش پذیر ہیں وہاں پر ایم کیو ایم کے یونٹ ، سیکٹر اور کراچی تنظیمی کمیٹی کے کارکنان کو خریدنے کے لئے پچاس کروڑ سے زاید نقد رقم موجود ہے ۔ جو مصطفیٰ کمال کی صوابدید پر ایم کیو ایم اور مہاجر قومی مومنٹ کے منحرف کارکنان میں وفاداریاں بدلنے کے عوض تقسیم کی جارہی ہے۔

محمد اقبال پیشے کے اعتبار سے کپڑے کا کام کرتے ہیں اور ساتھ ہی لکھنے لکھانے کا شوق بھی رکھتے ہیں۔

نے11 اپریل 2016کو شایع کیا۔

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *