شیعہ علماء کو نسل کا ڈی جی رینجرز سے مطالبہ

کراچی(اسٹاف رپورٹر) شیعہ علماء کو نسل صوبہ سندھ کے صوبائی دفتر میں کراچی کی بگڑتی ہوئی صورتحال پر علامہ ناظر عباس تقوی کی صدارت میں اہم ہنگامی اجلاس منعقد ہواجس میں علامہ شبیر میثمی،علامہ جعفر سبحانی،علامہ کرم الدین،یعقوب شہباز،حسنین مہدی سمیت زمہ داروں کی بڑی تعداد نے شرکت کی.

Advertisement
Null

علامہ ناظرعباس تقوی کا کہنا تھاملک میں جا ری دہشت گر دی کی نئی لہر جس میں ایک بارپھر ملت تشیوں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے یہ آپر یشن ضرب عضب اور نیشنل ایکشن پلان پر سوا لیہ نشان بنتا جارہا ہے اس ملک میں ملت تشیوں کے ساتھ سو تیلی ماں جیسا سلوک کیا جا رہا ہے جو ایک تشویش ناک عمل ہے.

پہلے شفیق موڑ پر جمعے کی نماز سے واپسی پر باپ،بیٹے اور گولڈ میڈلیسٹ ہاشم زیدی کو نشانہ بنایا گیا اور اب خرم زکی کو دہشت گردوں نے شہیدکر کے ایک بار پھر سے اپنے منعظم ہونے کا ثبوت دیا ہے لیکن دہشت گرد اپنی ان کار وائیوں سے ملت تشیع کے حوصلے کم نہیں کر سکتے پُر امن شہریوں اور اہم شخصیات کو نشانہ بنانے والے دہشت گرد آج بھی آزاد گھوم رہے ہیں جو حکومت اور قانون نا فز کر نے والوں کے لیے سوالیہ نشان ہے دہشت گرد نیشنل ایکشن پلان اور آپریشن ضرب عضب کو آئے دن چیلنج کر رہے ہیں اس ملک کے مقتدر حلقوں کو ملت تشیع کے بارے میں انتہائی سنجیدگی کے ساتھ سوچنا ہوگا کیونکہ اس ملک میں سب سے ز یادہ نقصان ملت تشیع کا ہوا ہے.

حکومت کو چائیے کے بلا تفریق پورے ملک میں آپریشن کرے خرم زکی اتحاد بین المسلمین کے داعی تھے اور محب وطن رہنماں تھے اور ریا ست مخالف قوتوں کے خلاف آواز بلند کر تے تھے اُن کی کا وشوں کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا ہم وزیر اعلی سند ھ قائم علی شاہ،وزیر داخلہ سندہ،ڈی، جی، رینجرز اور آئی،جی، سندہ سے مطالبہ کر تے ہیں کے خرم زکی اور اس سے قبل شہید ہونے والے تمام شہداء کے قاتلوں کو گرفتار کر کے انصاف کے کٹہرے میں لا یا جائے شہداء کے لواحقین انصاف کے منتظر ہیں.

نے9 مئی 2016کو شایع کیا۔

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *