مولانا مطیع الرحمن نظامی معافی کیوں نہیں مانگتے؟

سید قطبؒ کی بہن حمیدہ قطبؒ کو ان کے پاس بھیجا گیا کہ بھائی سے کہو معافی مانگ لے رہائی ملے گی، الولعزم بھائی نے بہن کی وساطت سے حکومت کا پیغام سنا اور بعد میں پوچھنے لگے کہ اے پیاری بہن یہ تو حکومت کا پیغام تھا آپ کا کیا مشورہ ہے؟ غیرت ایمانی میں لپٹی بہن استقامت ایمانی سے گویا ہوئی کہ بھائی کبھی معافی نہ مانگنا

Advertisement
Null

سید مودودیؒ کو ختم نبوت کی تحریک کے دوران کہا گیا کہ معافی مانگ لو، سیدؒ نے جواب دیا کہ ہرگز نہیں میرا مقدمہ اللہ کی عدالت میں ہے، میں معافی نہیں مانگوں گا

بنگلہ دیش میں پچھلے چند سالوں میں جماعت اسلامی کے ممتاز رہنمائوں کو پھانسی پر چڑھایا گیا لیکن کسی نے معافی نہیں مانگی

مولانا مطیع الرحمن نظامی اسی روایت کے پیروکار ہیں، یہ معافی نہیں مانگتے، استقامت سے کھڑے رہتے ہیں، دنیا سے زیادہ انھیں اللہ کے ساتھ ملاقات کا شوق ہے.

نے11 مئی 2016کو شایع کیا۔

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *